Posted by: Bagewafa | اپریل 29, 2013

نہ جانے کیوں۔۔۔۔انور کمال

نہ جانے کیوں۔۔۔۔انور کمال

 

ہے عجیب زندگی نہ جانے کیوں

اس میں کم ہے خوشی نہ جانے کیوں

 

جانے کس کی تلاش ہے اس کو

بہ رہی ہے ندی نہ جانے کیوں

 

میری چاروں طرف ہے ٓاوازیں

پھر بھی یہ خاموشی نہ جانے کیوں

 

اپنی حالت پہ ہم بہت روئے

آ گئ پھر بھی ہنسی نہ جانے کیوں

 

جان کے دشمن سے دوستی انور

ہو گئ دوستی نہ جانے کیوں

Ghazal recited by janab Anwar Kamal on 27 April 2013 Mushayra In Richmondhill

Advertisements

زمرے

%d bloggers like this: