Posted by: Bagewafa | اکتوبر 5, 2013

ہمالہ ۔۔۔۔۔۔علامہ محمد اقبال

himalaya_mountains_nepal_wallpaper-normal

ہمالہ ۔۔۔۔۔۔علامہ محمد اقبال

 

!اے ہمالہ! اے فصيلِ کشورِ ہندوستاں

چومتا ہے تيری پيشانی کو جھک کر آسماں

 

تجھ ميں کچھ پيدا نہيں ديرينہ روزی کے نشاں

تُو جواں ہے گردشِ شام و سحر کے درمياں

 

ايک جلوہ تھا کليمِ ُطورِ سينا کے ليے

تُو تجلی ہے سراپا چشمِ بينا کے ليے

 

امتحانِ ديدۂ ظاہر ميں کوہستاں ہے تُو

پاسباں اپنا ہے تُو ، ديوارِ ہندُستاں ہے تُو

 

مطلعِ اوّل فلک جس کا ہو وہ ديواں ہے تُو

سوئے خلوت گاہِ دل دامن کشِ انساں ہے تُو

 

برف نے باندھی ہے دستارِ فضيلت تيرے سر

خندہ زن ہے جو کلاہِ مہرِ عالم تاب پر

 

تيری عمرِ رفتہ کی اک آن ہے عہدِ کہن

واديوں ميں ہيں تری کالی گھٹائيں خيمہ زن

 

چوٹياں تيری ثريّا سے ہيں سرگرمِ سخن

تو زميں پر اور پہنائے فلک تيرا وطن

 

چشمۂ دامن ترا آئینۂ سیّال ہے

دامنِ موجِ ہوا جس کے ليے رومال ہے

 

ابر کے ہاتھوں ميں رہوار ہوا کے واسطے

تازيانہ دے ديا برقِ سرِ کوہسار نے

 

اے ہمالہ کوئی بازی گاہ ہے تُو بھی ، جسے

دستِ قدرت نے بناياہے عناصر کے ليے

 

ہائے کيا فرط ِ طرب ميں جھومتا جاتا ہے ابر

فيلِ بے زنجير کی صورت اڑا جاتا ہے ابر

 

جنبشِ موجِ نسيم صبح گہوارہ بنی

جھومتی ہے نشّۂ ہستی ميں ہر گل کی کلی

 

يوں زبانِ برگ سے گويا ہے اُس کی خامشی

دستِ گل چيں کی جھٹک ميں نے نہيں ديکھی کبھی

 

کہہ رہی ہے ميری خاموشی ہي افسانہ مرا

کُنجِ خلوت خانۂ قدرت ہے کاشانہ مرا

 

آتی ہے ندّی فرازِ کوہ سے گاتی ہوئی

کوثر و تسنيم کی موجوں کو شرماتی ہوئی

 

آئینہ سا شاہدِ قدرت کو دکھلاتی ہوئی

سنگِ رہ سے گاہ بچتی ، گاہ ٹکراتی ہوئی

چھيڑتی جا اس عراقِ دل نشيں کے ساز کو

اے مسافر! دل سمجھتا ہے تری آواز کو

ليلئ شب کھولتی ہے آ کے جب زلفِ رسا

دامنِ دل کھينچتی ہے آبشاروں کی صدا

وہ خموشی شام کی جس پر تکلّم ہو فِدا

 وہ درختوں پر تفکّر کا سماں چھايا ہوا

کانپتا پھرتا ہے کيا رنگِ شفق کُہسار پر

 خوشنما لگتا ہے يہ غازہ تِرے رخسار پر

اے ہمالہ! داستاں اُس وقت کی کوئی ُسنا

 مسکنِ آبائے انساں جب بنا دامن ترا

کچھ بتا اُس سيدھی سادی زندگی کا ماجرا

داغ جس پر غازۂ رنگِ تکلّف کا نہ تھا

 

ہاں دکھا دے اے تصّور! پھر وہ صبح و شام تُو

دوڑ پيچھے کی طرف اے گردشِ ايّام تُو

 

—————————————————–

Advertisements

زمرے

%d bloggers like this: