Posted by: Bagewafa | نومبر 14, 2018

بٹے رہو گے تو اپنا یوں ہی بہے گا لہو۔۔۔۔۔۔حبیب جالب

بٹے رہو گے تو اپنا یوں ہی بہے گا لہو۔۔۔۔۔۔حبیب جالب

 

۔

بٹے رہو گے تو اپنا یوں ہی بہے گا لہو

ہوئے نہ ایک تو منزل نہ بن سکے گا لہو

۔

ہو کس گھمنڈ میں اے لخت لخت دیدہ ورو

تمہیں بھی قاتل محنت کشاں کہے گا لہو

۔

اسی طرح سے اگر تم انا پرست رہے

خود اپنا راہنما آپ ہی بنے گا لہو

۔

سنو تمہارے گریبان بھی نہیں محفوظ

ڈرو تمہارا بھی اک دن حساب لے گا لہو

۔

اگر نہ عہد کیا ہم نے ایک ہونے کا

غنیم سب کا یوں ہی بیچتا رہے گا لہو

۔

کبھی کبھی مرے بچے بھی مجھ سے پوچھتے ہیں

کہاں تک اور تو خشک اپنا ہی کرے گا لہو

۔

صدا کہا یہی میں نے قریب تر ہے وہ دور

کہ جس میں کوئی ہمارا نہ پی سکے گا لہو

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s

زمرے

%d bloggers like this: